History of the world Series Big Socho ( Faisal Warraich ) Urdu

برفانی دور کا آغاز کب اور کیسے ہوا؟

پاکستان ویپ میں خوش آمدید! دنیا جیسا کہ آج ہے ہمیشہ ایک جیسی نہیں رہی ہماری زمین اپنی تخلیق کے بعد سے مختلف تبدیلیوں سے گزری ہے۔ کھلے میدانوں میں پہاڑ نظر آنے لگے، صحراؤں میں ندیاں بہنے لگیں- گرم علاقوں میں برف پڑنے لگی، کبھی زمین کا ایک حصہ کٹ کر جزیرے میں تبدیل ہو گیا۔ آج کی ویڈیو میں ہم ان تبدیلیوں میں سے ایک کے بارے میں بات کریں گے جس کا تعلق موسمیاتی تبدیلی سے ہے اور جسے آئس ایج کے نام سے جانا جاتا ہے۔ آئس ایج کیا ہے، اس کی وجوہات کیا ہیں؟ لاکھوں سال پہلے انسان نے برفانی دور کا مقابلہ کیسے کیا؟

برفانی دور کا آغاز کب اور کیسے ہوا؟ | آئس ایج کب اور کیسے شروع ہوا؟ | آئس ایج کب شروع اور کب ختم ہوا؟ | When and how did Ice Age begin? | When did the Ice Age start and when did it end? |

برفانی دور کا آغاز کب اور کیسے ہوا؟

اور اگلا برفانی دور کتنا دور ہے؟ یہ ہم آج کی ویڈیو میں سیکھیں گے۔ آئس ایج کیا ہے؟ برفانی دور وہ دور ہے جس کے دوران عالمی درجہ حرارت گرنا شروع ہو جاتا ہے قطب جنوبی اور شمالی قطب سے برف پھیلتی ہے،

یہ زمین کے ایک بڑے حصے پر محیط ہوتی ہے، گلیشیئر پھیلنے لگتے ہیں اور ہر چیز جم جاتی ہے، یہاں تک کہ سمندر بھی منجمد ہو جاتے ہیں۔ دوستو اگر آپ یہ سوچ رہے ہیں کہ برفانی دور چند ہفتوں تک رہتا ہے تو آپ غلط ہیں۔ کیونکہ برفانی دور ہزاروں، یہاں تک کہ لاکھوں سال تک رہتا ہے۔ اس دوران جہاں تک آنکھ نظر آتی ہے برف باری ہوتی ہے۔

اس کے بعد ایک وقت ایسا آتا ہے جس میں تمام برف پگھلنے لگتی ہے اور موسم معمول پر آنا شروع ہو جاتا ہے۔ لیکن یہ برفانی دور شروع ہونے کے کئی ہزار ملین سال بعد ہوتا ہے برفانی دور کیسے شروع ہوتا ہے؟ برفانی دور کے دوران کرہ ارض کے شمالی اور جنوبی حصوں میں پائی جانے والی برف کی چادریں پھیلنا شروع ہو جاتی ہیں۔

سردیوں کی برف عموماً گرمیوں میں پگھلتی ہے لیکن اگر گرمیوں میں بھی موسم کافی گرم نہ ہو تو یہ برف نہیں پگھلے گی۔ درحقیقت ہر سال موسم سرما میں برف باری کے بعد یہ برف باری ہوتی رہتی ہے یہ سلسلہ کئی سالوں تک جاری رہتا ہے۔

اس جمع برف کے وزن کی وجہ سے گلیشیئر بہنے لگتے ہیں۔ اور اس طرح کھلے میدانوں میں جھیلیں بنتی ہیں جو سرد موسم میں جم جاتی ہیں اور زیادہ برف باری کے بعد وہاں برف جمع ہو جاتی ہے۔ اور دوستو، یہیں سے برفانی دور شروع ہوتا ہے کھلے میدان برف سے ڈھکے ہوئے ہیں۔

ایک اندازے کے مطابق برف کی اس تہہ کی موٹائی بعض جگہوں پر 12000 فٹ سے بھی زیادہ ہوسکتی ہے برفانی دور کا دورانیہ جس میں زمین کا درجہ حرارت کم ہوجاتا ہے اسے برفانی دور کہا جاتا ہے۔ پھر بین برفانی دور میں زمین کا درجہ حرارت بڑھنا شروع ہو جاتا ہے جس سے گلیشیئرز اور برف پگھل جاتی ہے۔

آخری برفانی دور کب آیا؟ محققین کے مطابق دنیا اب تک کم از کم پانچ برفانی دور سے گزر چکی ہے ماہرین کے مطابق اس وقت ہم ایک بین البرفانی دور سے گزر رہے ہیں یعنی اب درجہ حرارت بڑھ رہا ہے۔ آخری برفانی دور کا آغاز لاکھوں سال پہلے ہوا، جس کے دوران عالمی درجہ حرارت میں مسلسل کمی واقع ہوتی رہی۔ چوبیس ہزار سال پہلے تک اس برفانی دور کی شدت اپنے عروج پر پہنچ چکی تھی۔

اس دوران شمالی امریکہ، شمالی یورپ اور ایشیا کے کچھ حصے برف سے ڈھکے ہوئے ہیں۔ برفانی دور میں زمین کے 30 فیصد گلیشیئرز کے مقابلے میں آج، گلیشیئرز زمین کی سطح کا 11 فیصد احاطہ کرتے ہیں،

ان خطوں کے لوگوں کو گرم علاقوں کی طرف ہجرت کرنا پڑی۔ اس برفانی دور میں عالمی اوسط درجہ حرارت 13.7 ڈگری سینٹی گریڈ سے کم ہو کر 7.8 ڈگری سینٹی گریڈ تک گر گیا اور خطوں کا درجہ حرارت منفی چھ سے نیچے آ گیا تھا۔ بالآخر آج سے بارہ ہزار سال قبل اس برفانی دور کا خاتمہ ہوا اور پھر برفانی دور کا آغاز ہوا جو آج تک جاری ہے۔

آخری برفانی دور میں انسان اور جانور کیسے زندہ رہے؟ پچھلی برفانی دور میں انسانوں کو وہ سہولیات میسر نہیں تھیں جو آج ہمیں میسر ہیں اس دور میں ہم سردی میں سویٹر اور ہیٹر پہنتے ہیں لیکن دوستو ہم بات کر رہے ہیں ہزاروں لاکھوں سال پہلے اس وقت انسانوں کے پاس نہیں تھا۔

سویٹر یا ہیٹر، لیکن ایک تحقیق کے مطابق ہزاروں سال پہلے انسان زندہ رہنے کے معاملے میں آج کے مقابلے میں بہت بہتر تھے۔ برفانی دور شروع ہونے سے پہلے بھی موسم اور ماحول میں مختلف تبدیلیوں کی وجہ سے انسان اور جانور محتاط رہتے تھے، جانور اپنی خوراک کا بندوبست کرتے ہوئے گرم علاقوں میں چلے گئے۔ انسان بھی گرم جگہ تلاش کرنے لگے۔ کچھ لوگوں نے سردی سے بچنے کے لیے غاروں میں پناہ لی، وہ لکڑیاں اکٹھی کر کے آگ جلاتے تھے، برف سے نمٹنے کے لیے اس کے پاس خاص اوزار تھے۔

ان آلات نے انہیں جانوروں کے شکار میں بھی مدد فراہم کی۔ جہاں کہیں کوئی جانور نظر آتا اسے اپنا شکار بنا لیتے۔ یہ لوگ سردی سے بچنے کے لیے جانوروں کی کھالیں یا کپڑے استعمال کرتے تھے اور کئی تہوں کو لپیٹ دیتے تھے۔ بہت سے جانور، جیسے میمتھ اور کرپان والے دانت والے شیر، آخری برفانی دور میں ناپید ہو گئے۔ برفانی دور کب آئے گا؟

دنیا کا درجہ حرارت بڑھ رہا ہے – آج سے 15 ہزار سال بعد درجہ حرارت دوبارہ گرنا شروع ہو جائے گا اور زمین جم جائے گی تاہم ایک رائے یہ بھی ہے کہ گلوبل وارمنگ کی وجہ سے آئس ایج شروع ہونے میں مزید سال لگ سکتے ہیں آئس ایج کیوں آتا ہے؟

برفانی دور کی بہت سی وجوہات ہو سکتی ہیں۔ یقیناً دوستو اس برفانی دور یا برفانی دور کی بڑی وجہ درجہ حرارت میں کمی ہے لیکن آئیے جانتے ہیں درجہ حرارت میں کمی کی وجہ آپ جانتے ہیں کہ زمین اپنے مدار کے گرد گھومتی ہے۔

زمین کے مدار میں کوئی بھی تبدیلی زمین کو سورج سے دور یا قریب لے جا سکتی ہے۔ جب زمین سورج سے دور ہوتی ہے تو درجہ حرارت گرنا شروع ہو جاتا ہے۔ اسی طرح سورج کا ہر وقت مختلف رد عمل ہوتا ہے جس کے نتیجے میں روشنی اور حرارت نکلتی ہے جو زمین تک پہنچتی ہے تاہم اگر کسی وجہ سے یہ روشنی اور حرارت کم ہو جائے تو زمین پر درجہ حرارت گرنا شروع ہو جاتا ہے۔

ماحول، جیسے کاربن ڈائی آکسائیڈ، زمین کے درجہ حرارت کو بڑھا یا کم کر سکتا ہے۔ کاربن ڈائی آکسائیڈ کی کم سطح درجہ حرارت میں کمی کا سبب بن سکتی ہے۔ سمندری لہروں یا لہروں کی وجہ سے بھی درجہ حرارت گر سکتا ہے۔ دنیا میں بہت سے آتش فشاں ہیں۔ وہ بہت زیادہ حرارت پیدا کرتے ہیں اور وہ کاربن ڈائی آکسائیڈ کو ہوا میں بھی خارج کرتے ہیں۔ جس کی وجہ سے درجہ حرارت بڑھتا ہے، اگر آتش فشاں نہ ہو تو دنیا کا درجہ حرارت گرنا شروع ہو جاتا ہے، جو بعد میں برفانی دور کا باعث بن سکتا ہے،

برفانی دور کو کس نے دریافت کیا؟ دوستو ایک سوال جو آپ کے ذہن میں آ سکتا ہے وہ یہ ہے کہ جب ہزاروں سال پہلے آخری برفانی دور ختم ہوا تو ہمیں کیسے معلوم ہوا کہ برفانی دور کبھی گزرا ہے اور برفانی دور کیا ہے؟ آج سے دو سو سال پہلے انیسویں صدی میں بہت سے ماہرین ارضیات نے یورپ کے گلیشیئرز میں کچھ تبدیلیوں کا مشاہدہ کیا۔ اسی طرح برفانی دور میں ناپید ہونے والے جانوروں کی ہڈیوں سے معلوم ہوا کہ دنیا کی تاریخ میں کئی سرد ادوار گزر چکے ہیں۔

انہوں نے چٹانوں کا سروے بھی کیا اور مختلف تحقیقوں کے بعد بالآخر برفانی دور کے مکمل شواہد مل گئے ماہرین کے مطابق اگلا برفانی دور آنے میں 50 ہزار سال لگ سکتے ہیں لیکن دوستو، کوئی بھی یقین سے نہیں کہہ سکتا کہ اس کا نقشہ کیا ہے۔ زمین آج سے 50 ہزار سال کے برابر ہوگی یہ بھی ممکن ہے کہ گلوبل وارمنگ اس قدر بڑھ جائے

کہ دنیا کے سرد ترین علاقے بھی گرم علاقوں میں تبدیل ہو جائیں اور انسان مر جائیں گے مشہور اینی میشن کمپنی فاکس اب تک 6 اینی میٹڈ فلمیں بنا چکی ہے۔ آئس ایج کا موضوع جو برف کے دور میں مختلف جانوروں کی بقا پر توجہ مرکوز کرتا ہے۔ دوستو ہمیں کمنٹس میں بتائیں کہ آپ کو ہماری آج کی ویڈیو کیسی لگی۔ شکریہ

Read More::تاریخ کے 7 ایٹمی حادثے کون سے ہیں؟

❤️❤️Watch Historical Series English Subtitles And Urdu Subtitle

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

x

Adblock Detected

Please Turn off Your Adblocker. We respect your privacy and time. We only display relevant and good legal ads. So please cooperate with us. We are thankful to you